Universal News Network
The Universal News Network

رائل پام انتظامیہ کا ریلوے کے ساتھ معاہدہ کالعدم قرار ،رائل پام کلب ریلوے انتظامیہ کے حوالے کرنے کا حکم دیا ، عدالت

33

سپریم کورٹ کے جسٹس شیخ عظمت سعید اور جسٹس اعجازالاحسن نے کیس کا فیصلہ جاری کیا۔
عدالت نے رائل پام انتظامیہ کا ریلوے کے ساتھ معاہدہ کالعدم قرار دے دیا اور کلب پاکستان ریلوے کے حوالے کرنے کا حکم دیا۔
عدالتی فیصلے میں کہا گیا ہےکہ رائل پام کنٹری کلب کے تمام معاملات ریلوے انتظامیہ دیکھے گی، پاکستان ریلوے رائل پام کے تمام انتظامات بہترین طریقے سے کرے، تین ماہ میں رائل پام کے بہترین انتظامات کیے جائیں اور تین ماہ میں نئی انتظامیہ سے متعلق بھی قواعد و ضوابط طے کیے جائیں۔
۔ خیال رہے کہ رائل پام انتظامیہ نے کلب کو سیل کرنے پر ریلوے انتظامیہ کے خلاف عدالت سے رجوع کیا تھا۔ درخواست میں موقف اختیار کیا کہ حکم امتناعی کے باوجود ریلوے انتظامیہ نے کلب کو سر بمہر کیا۔ عدالت نے کلب انتظامیہ کو آڈٹ کمپنی کو ریکارڈ تک رسائی دینے کا بھی حکم دیا۔
عدالت کا کہنا تھا کہ کلب اور ریلوے کا ایک نمائندہ بھی کمپنی میں شامل ہو گا۔خیال رہے اس سے قبل سپریم کورٹ آف پاکستان نے حکم دیا تھا کہ جو زمین ریلوے کے استعمال میں ہے اسے فروخت نہیں کیا جاسکتا ،ْ وفاق اور صوبوں کی ملکیتی زمین کو ریلوے 5 سال سے زائد کی لیز پر نہیں دیگا ،ْایسی اراضی جو ریلوے آپریشن کیلئے درکار نہیں صرف 5 سال لیز پر دی جاسکتی ہے ،ْپاکستانریلوے کو کسی ہائوسنگ سوسائٹی بنانے کی اجازت نہیں ہوگی ،ْرائل پام کلب کے معاملے پر عبوری حکم جاری رہے گا ،ْ رائل پام کا مسئلہ الگ سنیں گے ۔

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.